PTI 11

خیبر پختونخوامیں مخصوص نشستوں پر پی ٹی آئی بازی لے گئی

پشاور۔
خیبرپختونخوا میں خواتین و اقلیتی نشستوں پر بھی پی ٹی آئی دیگر تمام جماعتوں پر بازی لے گئی ہے فارمولے کے مطابق اس کے حصہ میں خواتین کی بائیس میں سے سولہ اور اقلیتوں کی تین میں سے دو نشستیں آنے کاامکان ہے ۔

ذرائع کے مطابق ایم ایم اے اور اے این پی کو خواتین کی دودو جبکہ ن لیگ اور پی پی پی کو ایک ایک نشست ملنے کاامکان ہے ایم ایم اے کو ایک اقلیتی نشست بھی ملنے کا امکان ہے ذرائع کے مطابق اس وقت پی ٹی آئی کے اراکین کی تعداد آزاد اراکین کی شمولیت کے بعدبڑھ کر 67ہوچکی ہے خواتین کی سولہ اور اقلیتوں کی دو نشستیں ملنے کی صورت میں پی ٹی آئی کو 124رکنی ایوان میں 85ممبران کی حمایت حاصل ہوجائے گی۔

جبکہ حکومت سازی کے لیے سادہ اکثریت یعنی 62ممبران کی ضرورت ہوتی ہے گویا پی ٹی آئی کو ایوان میں دوتہائی اکثریت حاصل ہوجائے گی ایم ایم اے کے ممبران کی تعداد دس سے بڑھ کر تیرہ جبکہ اے این پی کے ممبران کی تعداد سات سے بڑ ھ کر نو ہوجائے گی ،اسی طرح پی پی پی کے چارسے بڑھ کر پانچ اور ن لیگ کی پانچ سے بڑھ کر چھ ہوجائے گی ق لیگ کاایک ممبر ہوگا جبکہ تین ممبران بدستور آزادرہ سکتے ہیں ۔

تاہم اسد قیصر ،پرویز خٹک ،علی امین گنڈاپور اور ڈاکٹر حید ر علی کے قومی اسمبلی میں جانے سے ڈاکٹر امجد علی کی طرف سے ایک صوبائی نشست خالی کرنے سے پی ٹی آئی کو چھ نشستوں کاخسار ہ برداشت کرنا پڑے گا جبکہ اے این پی حیدرہوتی کی طرف سے صوبائی نشست خالی کیے جانے کی صورت میں ایک نشست کی کمی کاسامنا کرے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں