plantation 15

بونیر: شجر کاری مہم اور مستقبل میں افادیت، عمران بونیری

بونیر عمران بونیری
کسی بھی ملک کی ٹوٹل رقبے کے حساب سے اس کے25فیصد ر قبے پر جنگلات کا ہو نا ضروری ہے لیکن بد قسمتی سے پاکستان میں یہ ر یشو تقر یبا ٌ6فیصد ہے جو کہ بہت کم ہے اور اس کی وجہ سے پاکستان کو موسم یاتی تبدیلیوں اور دیگر کئی قسم کے مسائل و مشکلات کا سامنا ہے۔آج کے دور جدید میں جنگلات اور در ختوں کی اہمیت سے انکار ممکن نہیں اور یہی وجہ ہے کہ ہر حکومت اور خاص کر پاکستان تحر یک انصاف کی سابقہ صوبائی اور موجودہ مر کزی و صوبائی حکومتوں نے شجر کاری پر توجہ دی ہے تا کہ جنگلات میں آضافہ ہوجائے ۔حکومت کے شجر کاری مہم پر لبیک کہتے ہوئے بونیر کے ضلعی انتظامیہ نے ضلعی حکومت کیساتھ مل کر وقتا فوقتا شجر کاری مہم چلائی ہے لیکن ضلعی انتظامیہ اور ضلعی حکومت نے 14اگست 2018اور ۲ ستمبر 2018کو شجر کاری کے ایسے مہم چلائے جس کو صوبائی سطح پر بہت پذیرائی ملی ۔
ضلعی انتظامیہ نے 14اگست جشن آزادی کے دن بونیر کے پہاڑی سلسلہ گنگر گلی میں شجر کاری مہم چلائی جس میں ضلعی انتظامیہ ،ضلعی حکومت،بلدیاتی ممبران،ر ضاء کاروں ،سول سوسائٹی ،سکولوں کے طلباء اور عام لوگوں نے حصہ لیتے ہوئے ایک لاکھ 55ہزار پودے لگائے تھے جس میں اس دن ضلع بھر میںلگائے گئے پودے بھی شامل ہیں۔عوام میں شجر کاری کے حوالے سے اگاہی پیدا کر نے کے لئے ضلعی انتظامیہ نے گنگر گلی کے مقام پر واک کا انعقاد بھی کیا جس میں کمشنر ملاکنڈ ڈویژن سید ظہیر الاسلام نے خصوصی شر کت کی تھی۔
2ستمبر 2018کو پرائم منسٹر ڈے پلانٹ فار پاکستان شجر کاری مہم کے تحت گر ین بونیر گر ین پاکستان ماٹو کے تحت ضلعی انتظامیہ نے محکمہ واٹر شیڈ اور محکمہ فارسٹ کے تعاون سے ایک بار پھر گنگر گلی کے مقام پر شجر کاری مہم کا انعقاد کیا جس میں تمام مکتبہ فکر کے لوگوں نے شر کت کر کے 50ہزار پودے لگائے۔ اسی دن ضلع بھر میں ضلعی انتظامیہ کے احکامات پر عمل کر تے ہوئے بلدیاتی ممبران،سکولوں کے طلباء ،پولیس ،عوام اور دیگر محکموں نے مجموعی طور پر ایک لاکھ 35ہزار پودے لگائے۔ضلعی انتظامیہ ،محکمہ فارسٹ اور محکمہ واٹر شیڈ نے عوام ،سکولوں اور دیگر محکموں کے تعاون سے ماہ اگست اور 2ستمبر کو مجموعی طور پر 2لاکھ 90ہزار پودے لگائے جبکہ ستمبر کے اخر تک مذید 2لاکھ 10ہزار پودے لگائے جائینگے جس سے پانچ لاکھ کا ہد ف پورا ہو جائیگا۔ڈپٹی کمشنر بونیر شفیع اللہ خان نے اپنے دفتر واقع سر کٹ ہاوں ڈگر میں اخبار خیبر سے خصوصی بات چیت کر تے ہوئے کہاکہ ضلع بونیر کے حلقہ پی کے 20اور حلقہ PK21میں شجر کاری مہم چلانے کے بعد اگلی مہم پی کے 22میں چلائینگے۔انہوں نے کہاکہ ضلعی انتظامیہ تمام ڈیپار ٹمنٹس،عوام،پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک،محکمہ فارسٹ،محکمہ واٹر شیڈ اور دیگر ر ضاء کاروں کے مشکور ہیں جس نے شجر کاری مہم میں ضلعی انتظامیہ کا ساتھ دیا اور گر ین بونیر ،گر ین پاکستان میں ضلعی انتظامیہ کے ساتھ اپنا حصہ ڈالا۔ ایک سوال کے جواب میں ڈی سی نے کہاکہ 40ہزار پودوں کے حفاظت کے لئے ایک چوکیدار ہو گا جو کہ اس کے حفاظت پر مامور ہوگا۔2ستمبر کے شجر کاری مہم میں بونیر کے ایم این اے شیر اکبر خان،ممبران صوبائی اسمبلی ر یاض خان،سید فخر جہاں باچا ،ڈی پی او صادق حسین بلوچ،پاک ار می اور اسسٹنٹ کمشنروں سمیت ڈی ایف او فارسٹ اور اے ڈی لوکل گور نمنٹ نے شر کت کی۔
ڈپٹی کمشنر بونیر نے اپنے پیغام میں کہا کہ سرسبز بونیر ہمارا مشن ہے اور اِن شاء اللہ اِس مشن کو باہمی تعاؤن سے پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔اُنہوں نے عوام سے اپیل کی کہ جنگلات کا تحفظ اصل میں زندگی کا تحفظ ہے، جنگلات ہی میں انسانی بقا اور فطرت کی خوبصورتی کے مناظر پوشیدہ ہیں، لہذا سرکاری ہلکاروں کے ساتھ ساتھ عوام بھی اِس کے تحفظ اور خیال رکھنے میں ضلعی انتظامیہ کا ساتھ دیں۔
2ستمبر کو محکمہ واٹر شیڈ چملہ ر ینج نے گر ین بونیر گر ین پاکستان کے تحت گور نمنٹ ڈگر ی کالج چملہ میں شجر کار ی مہم کے سلسلے میں ایک تقر یب کا انعقاد کیاجس میں ر ینجر غفور خان،کالج کے پر نسپل سمیع الحق،پروفیسرز،طلبائ،سیاسی قائدین بخت بلند خان،نصیب خان،ممبر ڈسٹر کٹ کونسل شیر ولی خان،مزمل شاہ اور دیگر لوگوں نے شر کت کی۔شر کاء نے کالج میں ایک ایک پودا لگا کر شجر کاری مہم کا افتتاح کیا جبکہ محکمہ واٹر شیڈ نے کالج اور اس کے مضافات میں تقر یبا ٌ چار ہزار پودے لگائے۔تقر یب سے خطاب کر تے ہوئے واٹر شیڈ چملہ ر ینج کے ر ینجر غفور خان نے کہاکہ واٹر شیڈ بلین ٹر ی سونامی پراجیکٹ کے تحت تحصیل مندنڑ میں 24لاکھ پودے لگا چکے ہیں جبکہ 6لاکھ 15ہزار پودے عوام میںمفت تقسیم کر چکے ہیں۔انہوں نے کہاکہ محکمہ واٹر شیڈ تحصیل مندنڑ کی شجر کاری مہم جاری ہے اور مہم میں پودے لگانے کیساتھ عوام کو بھی نر سر یوں سے مفت پودے فراہم کئے جار ہے ہیں۔اس موقع پر تقر یب سے مقررین نے خطاب کر تے ہوئے کہاکہ عوام موسمیاتی تبدیلیوں کے پیش نظر زیادہ سے زیادہ پودے لگائے جو صدقہ جاریہ کیساتھ ساتھ دنیاوی فائدہ بھی ہیں۔سابق امیدوار PK22بخت بلند خان نے تقر یب میں محکمہ واٹر شیڈ کی ستائش کی لیکن محکمہ فارسٹ پر تنقید کر تے ہوئے انہوں نے کہاکہ محکمہ فارسٹ نے تحصیل مندنڑ میں کوئی پلانٹیشن نہیں کی ہے۔نصیب خان نے کہاکہ محکمہ واٹر شیڈ اور دیگر محکمے لالچی کی بجائے دیگر ماحول دوست پودے لگائے تا کہ اس کے ماحول پر برے اثرات مر تب نہ ہو۔واضح ر ہے کہ بلین ٹر ی سونامی پراجیکٹ کے تحت زیادہ تر علاقوں میں لالچی کاشت کی گئی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں