LRH 44

لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں بھرتیاں غیر قانونی قرار

پشاور۔
خیبر پختونخوا کے میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیویشنز میں قواعد کے برعکس بھرتیوں کی تحقیقات کا عمل سست روی کا شکار ہو گیا ہے ٗ صرف لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں بھرتیوں کی انکوائری رپورٹ پیش کی گئی جس میں ڈائریکٹر اور میڈیکل ڈائریکٹر کی بھرتی کے عمل کو رولز کے خلاف قرار دیا گیا ہے۔

ایم ٹی آئی ہسپتالوں میں اعلیٰ عہدوں سمیت دیگر انتظامی آسامیوں پر قواعد کے خلاف بھرتیوں کی شکایات کی گئی تھیں جس پر چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے صوبے کے ایم ٹی آئی ہسپتالوں میں اعلیٰ عہدوں سمیت دیگر تمام آسامیوں پر بھرتیوں کے عمل کی تحقیقات کا حکم دیا تھا اس ضمن میں محکمہ صحت نے ایڈیشنل سیکرٹری کی سطح پر انکوائری کمیٹی قائم کی تھی ۔

ذرائع کے مطابق کئی ماہ بعد انکوائری کمیٹی نے صرف لیڈی ریڈنگ ہسپتال کی رپورٹ پیش کی ہے جس میں ڈائریکٹر اور میڈیکل ڈائریکٹر کی تعیناتی میں قواعد کی خلاف ورزی کا انکشاف کیا گیا ہے تاہم خیبر ٹیچنگ ہسپتال ٗ حیات آباد میڈیکل ہسپتال اور ایوب ٹیچنگ ہسپتال سمیت دیگر ایم ٹی آئیز میں بھرتیوں کی تحقیقات کا عمل تاحال مکمل نہیں کیا جا سکا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں