arrested 86

ایٹا ٹیسٹ کا پیپر آؤٹ کرنے میں ملوث 2 مرکزی ملزم گرفتار

پشاور۔کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے میڈیکل کے داخلہ کیلئے منعقد ہونیوالے ایٹا ٹیسٹ کا پیپر آؤٹ کرنے میں ملوث2 مرکزی ملزموں کو بھی گرفتار کرلیا ایٹا کا پیپر آؤٹ کرنے میں ڈرائیور اور چوکیدار نے مرکزی کردار ادا کیا تھاملزموں نے پیپر آؤٹ کرنے کے عوض نے 41 لاکھ روپے ہڑپ کئے تھے۔

اس ضمن میں گزشتہ روز ایس ایس پی انوسٹی گیشن نثار خان نے ڈی ایس پی انوسٹی گیشن کینٹ ارشد خان ٗ سرکل آفیسر امتیازعالم اور دیگر کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایاکہ سی سی پی او پشاور قاضی جمیل الرحمان کو اطلاع ملی تھی کہ 19 اگست کو میڈیکل داخلہ کیلئے منعقد ایٹا ٹیسٹ کا پیپر آؤٹ ہوا ہے جس کانوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او کی ہدایت پر ایس ایس پی آپریشنز جاوید اقبال اور ایس ایس پی انوسٹی گیشن نثار خان کی نگرانی میں اے ایس پی حیات آباد وقار عظیم کھرل ٗ ڈی ایس پی انوسٹی گیشن کینٹ ارشد خان ٗ سرکل آفیسر امتیاز عالم ٗ انسپکٹر حسن خان ٗ انچارج انوسٹی گیشن تاتارا سرتاج خان اور تفتیشی آفیسر شیر الرحمان پر مشتمل خصوصی ٹیم نے فوری کاروائی کرکے پیپر آؤٹ کرنے میں ملوث 6 ملزموں حضرت علی ٗ جمیل ٗ پیر فضل الوہاب ٗعزت خان ٗ محمود اور رحمان اللہ کو گرفتار کیا تھا۔

جنہوں نے دوران تفتیش مرکزی ملزمان کی نشاندہی کی جس پرایس آئی ٹی (سپیشل انٹاروگیشن ٹیم) نے فوری کاروائی کرکے ایٹا کے ڈرائیور ساجد ولد نصر اللہ سکنہ جٹی پایاں اور چوکیدار محمد اسحاق ولد دست محمد شگئی ہندکیاں کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے پیپر کے عوض لی گئی نقدی 9 لاکھ اور 32 لاکھ کا چیک برآمد کرلیاجبکہ ان کے قبضے سے ڈائریکٹر ایٹا کے دفتر اور سیکریسی روم کی جعلی(ڈوپلیکٹ) چابیاں بھی برآمد کی گئی ہیں ۔

دوران تفتیش مزید انکشاف ہوا کہ ڈرائیور ساجد اور محمد اسحاق نے منصوبہ بندی کے تحت ڈوپلیکٹ چابیاں بنوائی تھیں اور موقع ملتے ہی پیپر غائب کرکے آؤٹ کر دیا تھا اور امیدواروں سے بھاری رقم وصول کی تھی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں