test 1 12

ایٹا ٹیسٹ کی جوڈیشل انکوائری کرائی جائے، طلبہ

پشاور
خیبرپختونخوا کے میڈیکل و ڈینٹل کالجز کیلئے ایوالویشن ٹیسٹنگ ایجنسی کی طرف سے منعقدہ انٹری ٹیسٹ کے نتائج پر طلبہ اور والدین نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ٹیسٹ میں بے قاعدگیوں اور طلبہ کو انصاف فراہمی کیلئے جوڈیشل انکوائری کرنے اور دوبارہ ٹیسٹ لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

پشاور پریس کلب میں ایٹا ٹیسٹ سے متاثرہ ڈاکٹر حقان جہانگیر، فرقان، حولہ، اعزاز الرحمن، حمایت اللہ، فیصل علی اور دیگر طلباء اور ان کے ولدین نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ رواں سال میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں کیلئے ایٹا انٹری ٹیسٹ میں پہلے دن سے ہی بے قاعدگیوں کا سلسلہ جاری تھا پہلی مرتبہ 15جولائی کو ناقص انتظامات کی وجہ سے طلبہ کو چار گھنٹے انتظار کرنے کے بعد ٹیسٹ کوکینسل کیا پھر غیر ذمہ دارانہ اقدام کرتے ہوئے 23ستمبر کو دوبارہ ٹیسٹ لینے کو کہا جس دن پنجاب کے میڈیکل کالجوںکا بھی ٹیسٹ تھا تاہم اس ٹیسٹ کو بھی منسوخ کرنا پڑااوربعد میں ٹیسٹ لیا گیاتاہم اس مرتبہ بھی ایٹا کی نااہلی اور انتظامیہ کے اہلکاروں کی کرپشن کی وجہ سے پیپر پہلے سے ہی آوٹ ہوا جس کی وجہ سے ٹیسٹ کو منسوخ کرنا پڑا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں