female 8

پاکستان میں 62فیصد خواتین خون کی کمی کا شکار ہیں ‘رپورٹ

پشاور۔ملک بھر میں 62فیصد خواتین خون کی کمی ( ای نیمیا) کا شکار ہے۔ ہر چار میں سے تین افراد اس مرض میں مبتلا ہیں ۔ پاکستان دنیا کے ان پانچ ممالک میں شمار ہوتا ہے شہری کے مقابلے میں دیہاتی علاقوں میں 80فیصد بچے اور خواتین اس مرض کا شکار ہیں ۔

خون کی بنیادی کمی کی وجہ غذائی قلت ہے ۔ یو نیسف اوردیگر کے اشترا ک سے کئے جانے والے سروے کے مطابق پاکستان میں 62فیصد خواتین خون کی شدیدکمی کا شکار ہیں خون کی کمی اور دوران زچگی کی وجہ سے 1لاکھ خواتین میں سے 178خواتین جاں بحق ہو رہی ہیں ۔ ایک سال کے ایک ہزار میں سے 78جبکہ پانچ سال کی عمر میں 1ہزار میں سے 98بچے مر جاتے ہیں ۔

خون کی کمی کی بنیادی وجہ غذائی قلت ہے ۔ جبکہ بچوں میں آلودہ پانی کے استعمال سے آنتوں میں کیڑے ہو جاتے ہیں جو خون کی کمی کا سبب بنتے ہیں ۔ پاکستان عالمی سطح پر،،بھوک کا شکار ،، ممالک کے فہرست میں 14ویں نمبر پر ہے ملکی کی اکیس کروڑ آبادی میں سے 5کروڑ سے زائد افراد کو پیٹ بھر کا روٹی میسر نہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں