kilash 4

سیاحت فروغ کیلئے کیلاش کی وادیوں میں تعمیر پر پابندی

پشاور۔
خیبر پختونخوا نے کیلاش قبیلے کی ثقافت کو محفوظ بنانے اور چترال میں سیاحت کو فروغ دینے کے لئے ڈائرکٹر آرکیاکوجی کی سربراہی میں کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیاہے کمیٹی فرینڈ ز آف کیلاش،مقامی آبادی اور یونیسکو کے نمائندوں پر مشتمل ہوگی جو ایک مہینے کے اندر اندر کیلاش قبیلے کی ثقافت کو محفوظ بنانے اور چترال میں سیاحت کو فروغ کے لئے سفارشات تیار کرکے پیش کریگی۔

یہ فیصلہ کیلاش کلچر کو محفوظ بنانے اور چترال میں سیاحت کو فروغ دینے کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں کیا گیا جس کی صدارت سینئر صبوائی وزیر سیاحت عاطف خان نے کی اس موقع پر کیلاش قبیلے سے تعلق رکھنے والے ممبرصوبائی اسمبلی وزیر زادہ، محکمہ سیاحت کے ایڈیشنل سیکٹری بابر خان،منیجنگ ڈائریکٹر مشتاق احمد اور ڈائریکٹر آرکیاکوجی بھی موجود تھے۔اجلاس میں کیلاش قبیلے کے تین وادیوں رمبور،بمبوریت اور بریر میں محکمہ آرکیالوجی کی اجازت کے بغیر تعمیراتی کام پرمکمل پابندی کا فیصلہ بھی کیا گیا۔

اجلاس میں کیلاش قبیلے کی قبرستان،عبادت گاہوں اور کیلا ش کی خوبصورتی کے لئے 15کروڑ روپے کی منظوری بھی دی گئی ہے۔سینئر وزیر نے کہا کہ کیلاش قبیلے کے نوجوانوں کو باروزگار بنانے کے لئے خیبر پختونخوا امپیکٹ چیلنج پروگرام کے تحت ترجیحی بنیادوں پر گرانٹ بھی فراہم کیے جائیگے۔سینئر وزیر نے کہا کہ کیلاش میں روایتی کھیلوں کے فروغ کے لئے سپورٹس گراونڈ بنائے جائینگے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں