operation 4

غیر قانونی پیوند کار کی روک تھام کیلئے اقدامات کا فیصلہ

پشاور۔
خیبر پختونخوا میں انسانی اعضاکی غیر قانونی پیوند کاری کی روک تھام کیلئے اقدامات اور مؤثر لائحہ عمل کافیصلہ کیا گیا ہے ٗ محکمہ صحت کو ایف آئی اے کی مدد سے مشترکہ اقدامات اٹھائے گاجبکہ موجودہ دور کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے نئی قانون سازی بھی کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے اس امر کا فیصلہ گزشتہ روزسیکرٹری صحت خیبر پختونخوا ڈاکٹر فاروق جمیل کی زیر صدارت ایک اجلاس میں کیا گیا جس میں ایم ٹی آر اے کے ایڈمنسٹریٹر آصف ملک ٗ کے پی ایچ سی سی کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر سکواڈرن لیڈر ریٹائرڈ اظہر اور ایف آئی اے کے ڈپٹی ڈائریکٹر سید رضوان شاہ نے بھی شرکت کی ۔

اجلاس میں غیر قانونی پیوند کاری سے متعلق ایک مقدمے کے دوران پشاور ہائی کورٹ کی طرف سے دی گئی ہدایات پر پیش رفت کا بھی جائزہ لیا گیا اور اس غیر قانونی عمل کو رکوانے کیلئے مؤثر اقدامات کی منظوری دی گئی اور فیصلہ کیا گیا کہ اس سلسلے میں محکمہ صحت اور ایف آئی اے مشترکہ طور پر اقدامات اٹھائینگے جس کے نتیجے میں غیر قانونی پیوند کاری اور عوام کو اس سے درپیش مسائل پر قابو پایا جائے گا اجلاس میں موجودہ دور کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے نئی قانون سازی پر بھی تبادلہ خیا ل ہوا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں